عوام بے حال

بڑھتی غربت ___ غریب کا جینا محال
کیا آپ نے بڑھتی غربت کے متعلق کبھی سوچا؟اسکی شرح میں کتنا اضافہ ہو ا اور ہوتا جارہا ہے؟ اسکی اہم وجوہات کیا ہیں؟
گورنمنٹ آف پاکستان کی جانب سے کئے گئے سروے اور تجزیے کے مطابق پچھلی دہائی میں غربت کی شرح میں 30 سے 40 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ یہ صرف 2010 ؁ء تک کا ایک تجزیہ تھا۔ اسکے بعد بھی غربت میں تیزی سے اضافہ ہوتا رہا ہے اور ہو رہا ہے تو آپ خود اندازہ لگا سکتے ہیں کہ اس وقت کیا صورتِحال ہوگی۔ جب نصف آبادی سے زائد افراد ٖصرف اتنا کما رہے ہوں کہ اس سے انکی روزمرہ کی ضروریات اور بنیادی ضروریاتِ زندگی بھی پوری نہ ہو پا رہی ہوں تو ایسے میں انہیں حالات چوری اور ڈاکہ زنی کے ذریعے اس معاشرے سے زبردستی اپنا حق پر ہی مجبور کریں گے۔ اسکی ایک اہم وجہ آجکل کی تعلیم یافتہ آبادی کا اچھا روزگار یا نوکری حاصل نہ کر سکنا بھی ہے اور اسکے پیچھے واضح طور پر رشوت اور سفارش جیسی لعنت کا ہاتھ ہے۔ بڑھتی غربت کے باعث نہ صرف عوام بلکہ ملک کے حالات بھی خرابی کا سامنا کرتے جا رہے ہیں۔ معیشت گرتی جا رہی ہے۔ قابل افراد کی جگہ چند پیسوں کے عوض نا اہل افراد کی تقرریاں اس ضمر میں پیش پیش ہیں۔ مہنگائی ایک اور اہم وجہ ہے۔ دن بہ دن روپے کی قدر میں واقع ہوتی کمی مہنگائی کا باعث بنتی جا رہی ہے۔ ایسے میں نزلہ صرف غریب عوام پر ہی گر رہا ہے کیونکہ امیراپنے اعلیٰ کاروبار کے ذریعے مزید کما کر اس کمی کو بآسانی پورا کر لیتا ہے۔ تیسری اہم کڑی بڑے پیمانے پر عوام کے پیسے کی خرد برد ہے۔ عوام سے لیا گیا ٹیکس ان کی فلاح و بہبودپر خرچ کرنے کی بجائے اس پر ہمارے امراء وزراء عیش کر رہے ہوتے ہیں۔ اب سوچنا یہ ہے کہ اگر اسکا مکمل خاتمہ ممکن نہیں بھی ہے تو اسکی شرح کم کیسے کی جا سکتی ہے؟ کیا ظلم کی چکی میں پسنے کیلئے صرف غریب رہ گئے؟ کیا نئی اآنے والی حکومت زیادہ سے زیادہ لوگوں کو روزگار دینے کے اپنے کیے گئے عودے اور دعوے پر پورا اترے گی؟ عوام بے حال۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *