ہم کیوں پیچھے ہیں

نا خواندگی کے اسباب
ناخواندگی کی اصل تعریف کیا ہے؟ ہمارے ملک میں اسی شرح کیا ہے؟ اسکی اہم وجوہات میں کیا کیا شمار ہے؟ ناخواندگی کی تعریف 15سال سے زائد عمر کے افراد کاپڑھنے لکھنے کی صلاحیت سے محروم ہونا ہے۔ اس تعریف کے مطابق سرکاری طور پر منظور شدہ نتائج کے تحت پاکستان کی نصف آبادی ناخواندگی کا شکار ہے۔اسکی سب سے اہم وجوہات میں دورِ جاہلیت کی روایات کی پیروی کرنے والے خاندان سے تعلق ہونا، مہنگائی اور غربت سرِ فہرست ہیں۔ کچھ جاہل افراد تعلیم کو ایک غیر ضروری شے تصور کرتے ہیں ۔ انکے خیال میں زندگی گزارنے کیلئے بس ذریعہ معاش ہی چاہیے جو کہ بنا تعلیم بھی حاصل کیا جا سکتا ہے۔ اسی غلط نظریعے کے پیشِ نظر وہ اپنے بچوں کو تعلیم سے دور رکھتے ہیں۔ مہنگائی ایک ایسا عنصر ہے جو بیشتر آبادی کی تعلیم کے حصول کی شدید خواہش کے باوجود انہیں اچھی اور معیاری تعلیم حاصل کرنے سے محروم رکھے ہوئے ہے۔ غریب اور اوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے زیادہ تر طلباء کو مہنگائی کے باعث یا تو تعلیم ترک کرنا پڑتی ہے یا پھر کسی غیر معیاری ادارے میں تعلیم حاصل کرنا پڑتی ہے جس میں اخراجات تو کم ہوتے ہیں مگر اسی نسبت سے تعلیم کا ہونا نہ ہونا برابر ہوتا ہے۔انتہائی غربت اکثر والدین کو مجبور کر دیتی ہے کہ وہ بچوں کو محنت مزدوری پر لگا دیں اور یوں جس عمر میں ان معصوم بچوں کو ہاتھ میں کتاب پکڑنی چاہیے ،اس عمر میں وہ اوزار پکڑ کر چیزوں کی مرمت یا بناؤ کا کام سر انجام دے رہے ہوتے ہیں۔ ایسے میں تعلیم کی دور دور تک کیا امید ہونی؟اسکا حل کیا ہے؟ کیا کیا اس ناخواندگی کے پیچھے موجود اسباب کے خاتمے پر توگہ دی جائے گی؟ مہنگائی کو کم کرنے کیلئے اقدامات کیے جائیں گے؟ جاہل اور ان پڑھ افراد میں شعور بیدار کرکے انہیں تعلیم کی اہمیت و حیثیت سے واقف کرایا جایا جائے گاتاکہ وہ اپنے بچوں کو اس دولت سے ہمکنار کروائیں؟ کیا یہ صرف اکیلے گورنمنٹ کی ہی ذمہ داری ہے؟کیا غربت کی شرح کم کرنے کے بارے میں سوچا جائے گا تاکہ اس سے جڑے کئی مسائل کا خاتمہ ممکن ہو سکے؟ ہم کیوں پیچھے ہیں!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *